مُختصر سفر

image

شامِ زِندگی ڈھلتی جا رہی ہے اب تو

سفر میری جُستجو کا شُروع اب ہُوا تھا

شبِ فُرقت کی گِرفت میں ہیں آہیں میری

سفر میری قُربت کا شُروع اب ہُوا تھا

طوافِ آرزو کے نِشا ں مدھم ہوئے جا تے ہیں

سفر میری عقیِدت کا شُروع اب ہوُا تھا

آزمائشِ عشق کی با زی ما ت دیتی نظر آتی ہے

سفر میری جِیت کا شُروع اب ہوُا تھا

حرارتِ شمعٰ فنا ہونے لگی ہے اب تو

سفر میری رُوحانیّت کا شُروع اب ہُوا تھا

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s