با رِش

image

اِس بے خُود بارِش میں

برس جانے کو جی چاہتا ہے

چھم چھم ناچتی مستی میں

پایل چھنکا نے کو جی چاہتا ہے

خود پہ بے حد اِتراتے ہوُۓ

لُٹ جانے کو جی چاہتا ہے

بارش میں چہرہ چُھپا کے

شرمانے کو جی چاہتا ہے

گِیلی مِٹّی کی خوشبو سے

مِہک جانے کو جی چاہتا ہے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s