بغیر پَر کے

image

میرا دِن تُو ہے اور رات بھی تُو

جو ہر بات کہوُں اُس بات میں تُو

تیری جُستجُو ہو فقط اور خیال میں

دِل کی دھڑکن اور نرم جذبات میں

قدموں میں بیٹھے ہیں سَر جھُکاۓ ہُوۓ

باہوں میں بھر لو ، ہیں دامن پھیلاۓ ہوُۓ

چمپئ پھُول سے مِہکا دُوں جِسم تیرا

خوشبوِ عِشق میں نِہلا دُوں حُسن تیرا

مُحبّت میں بے بس ہوُۓ جاتے ہیں

روحِ جانم میں اپنا نِشاں چھوڑے جاتے ہیں

لبوں کو لرزنے دو سانسوں کو اُکھڑنے دو

سردی کی راتوں میں چاہت کو سُلگنے دو

یہ طلِسماتی چشم یہ بھرپور ہاتھ تُمہارے

بھریں وجُود میں زہر نظر میں شرارے

مِحفل میں بے خُودی سی طاری ہو گئ

شمعٰ جو اپنی تھی وہ تُمہاری ہو گئ

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s