بے دل خُوشی

image

کوئی مِحفل تیری یاد سے خالی نہیں جاتی اب تو

ختم کر رہی ہے عالمِ بے بسی دل کو دھیرے دھیرے

تماشائی نظر آتے ہیں گِرد و نواہ جال پھیلاتے ہوُۓ

فنا کر رہا ہے حُسنِ بناوٹ احساس کو دھیرے دھیرے

ماندھ پڑ گۓ ہیں آنکھوں کےاُجالے تجھے ڈُھو نڈتے

کاٹ رہی ہے سیاہِ فُرقت  رُوح  کو دھیرے دھیرے

نا پسند خُود نظر آنے لگتی ہوں جب تُو نہ ہو سامنے

چِیر رہا ہے گھونٹِ زہر جگر کو دھیرے دھیرے

One thought on “بے دل خُوشی

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s