گِرفت

image

یہ وہ راستے ہیں جن کی اِبتدا مُجھ سےاور مُجھی پہ اِنتہا جانم

جکڑ لِیا ہے تُجھے دل کے مضبُوط تاروں سے میں نے

اِن باہوں میں تیری سحر آغاز کرے اور شب اِختتام پہ پہنچے جانم

گھیر لِیا ہے تُجھے قید کے خُوبصورت دھاگوں سے میں نے

اِن دھڑکنوں کی گُونج میں تیری دھک دھک سُنائی دیتی ہے جانم

جوڑ لِیا ہے تُجھے رُوح کے بے قرار رشتوں سے میں نے

بڑھتے ہُوۓ ہاتھوں کو تیرے چُومتی ہے تپتےلمحوں کی حرارت جانم

تھام لِیا ہے تُجھے ہونٹوں کے شبنمی شعلوں سے میں نے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s