تِتلیاں

image

اُس کے ہاتھ کی خوشبو

ابھی تک اپنے جسم کے

گوشوں میں گردش کرتی

محسوس ہوتی ہے اور اِس

مہک کے سرُور سے  بھرنے

لگے جب رُوح کا آسمان تب

میرے دل کے مِحل میں

….تِتلیاں ناچتی نظر آتی ہیں

سوچتے ہُوۓ جب اپنی ذُلف

ایسے اُنگلی میں لَپیٹوُں تو

اُس کی پیار بھری نظر ایسے

چمکنے لگتی ہے  جیسے کالی

بَدلی سے جھانکتے چاند کی

شوخ کِرن فرش پہ قادر ہونے

لگے اور اِس روشنی سے میرے

حُسن کی  خورشید گلیوں میں

…..تِتلیاں ناچتی نظر آتی ہیں

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s