گُل گِیر

image

مُحبّت کی کَڑی زنجیِرمیں بندھےہاتھ ہیں

سِتم گر نے قیدِ عاشقی میں مزارکھا ہے

سیلابِ درد میں چُھپا سرُور کا دریا ہے

سِتم گر نے بربادئِ دل میں مزا رکھا ہے

خُود کےآنسو پیتےہیں آبِ مےسمجھ کر

سِتم گر نے پیالۂِ زہر میں مزا رکھا ہے

شمعٰ اپنے وجود کو مِٹتا دیکھ رہی ہے

سِتم گر نے سوزِ آتِش میں مزا رکھا ہے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s