میرا مقام

image

….اُس کے شہر کی گلیوں میں

پُھول کِھلتے ہیں بے حساب اور

گھٹاؤں کے پردوں سے چَھنتی

دھُوپ مُحبّت برساتی ہے

….اُس کے شہر کی گلیوں میں

سُورج میرا نام لیتا ہے اور

چُومتا ہے اِس بدن کی

دِیواروں کو جب تِتلی بن

اُڑنے لگتی ہُوں

….اُس کے شہر کی گلیوں میں

مُسکراہٹ جب دبے پاؤں

آتی ہے اور رونق شاہانہ انداز

میں دستک دیتی ہے تو زندگی

اور خُوبصورت ہو جاتی ہے

….اُس کے شہر کی گلیوں میں

سُناتی ہے صبا عشق کی

کہانیاں تب چاروں اُور

گُلاب کی پنکھڑیاں رقص

کرتی نظر آتی ہیں

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s