…کبھی نہ ختم ہونے والےسِلسلے

image

پلکوں کی چھاؤں میں تڑپتی راتیں

وہ سِتاروں کی روشنی میں لِپٹی چاندنی

اُن یادوں کے سرہانے سمٹی خواہشیں

آغوش کے سایوں میں دو دھڑکتے جذبات

…وہ حسین لمحے نہ ختم ہونے والے سِلسلے

دُعا میں پھیلے ہاتھ ہوں جیسے

سجدےمیں گِرتے گڑگڑاتے ہوں جیسے

خزاں کے سُرخ زرد پتّوں کی زندگی

سُرمئی شام کی آخری کرن ہو جیسے

….وہ حسین لمحے نہ ختم ہونے والے سِلسلے

خوُشبو سے مُعطّر پیروں کی مہندی

احساس کے بِچھونے میں رُوح کی گرمی

شفافیّت میں گھُلی آئینے کی شبی

بارش کی پہلی بُوند جب ہونٹ کو چُبھی

…وہ حسین لمحے نہ ختم ہونے والے سِلسلے

بے تاب آرزو میں لِپٹی کوئی تمنّا ہے

ادھورے عکس کی کیفیّت سے لڑتی رہی

وہ نا مُکمّل رہی اُس آگ میں جل کے

کائینات کی روشنی میں چُھپی کسک ہو جیسے

…وہ حسین لمحے نہ ختم ہونے والے سِلسلے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s