پِہچان

image

خواب آنکھوں میں بند

ایک تصویر کی مانِند

ہیں جن کے رنگ اپنی

شناخت میں بے مثال ہیں

اور اِن کی شوخی سے

جب میری نیند کروٹ لینے

لگتی ہے تب کُھلتے ہیں

نۓ دریچے جن سے

…نظر آتی ہیں جَنّتیں

خود کو سونپتے ہُوۓ

اِن جَنّتوں میں جب

سبز ہواؤں کے شور

تلے لہرانے لگُوں تب

وہ حسین وجُود باہیں

پھیلاۓ اِس ریشمی آنچل کا

….اِنتظار کر رہا ہوتا ہے

رات کے اِس ادھُورے

پِہر جب چمپئ پھُولوں

میں لِپٹے دو بدن خوابوں

میں بسے سراب کو چھُو

رہے ہوتے ہیں تب ایک

ہلکی سی آہٹ چونکا دیتی

ہے اور آنکھ سے پَلک کا

رِشتہ فاصلوں میں بدل جاتا

ہے اور وہ پُرکشش چہرہ

اُسی کُہرے میں واپس

…لَوٹ جاتا ہے

پھر ایک دن نہ خواب آیا

اور نہ ہی پلکوں نے فُرقت کا مزا

چَکھااور تقدیر کے ماتھے پہ

چمکامہتاب جس کی دمک نے اِن

اندھیری گلیوں کو زندگی بخشی

اور اِس ادھورے خواب کو

مُکمّل بنایا اور مُجھے

…میری پِہچان مِلی

تُم میرے اِن قیمتی خوابوں

کی سچّی تعبیر ہو جو دن

کے ڈھَلتے پِہروں اور چاند

کی مہکتی راتوں میں دیکھے

ہیں جنہیں گُلاب کے پھُولوں

سے سجایا ہے مِحض تُمہارے

لِیۓ  اور اب اِس گُلشن میں

….دیکھو کتنی بہار آئی ے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s