…ایک پہیلی ہُوں

image

میں ایک خیال ہُوں جس کی

…حیِثیّت سیِپ میں بند موتی سی ہے

کوئی سراب ہُوں جس میں

…گُم ہو جانے کا ڈر ہو

ایک مُرجھایا گُلاب ہُوں جس کے

…رنگ میں شوخی کمال کی ہے

یا صرف ڈھلتی شام جس کے

…آسمان پہ شمس کا گُزر نہ ہو

شاید تَپتی ریت ہُوں جس میں

…جلنے سے راحت بخشتی ہےپیروں کو

وہ چاندنی ہُوں جس کے

… داغ میں جھیل آئینہ دیکھتی ہے

کبھی نرم احساس کا بِچھونا جس کے

…آنچل میں کانٹوں کے گُلدستے ہیں

یا صرف ڈُوبتا سمندر جس میں

…فنا ہونے کا خوف بھی نہیں

میں وہ پرچھائی کو اوڑھے ہُوں جو

…اپنی شناخت ڈھُونڈ رہی ہے

کوئی سایہ ہُوں جو فقط

…چھاؤں میں نظر آۓ

ایک خواب کی ذینت ہُوں جس کی

…شان میں حقیقت سجدے کرتی ہے

کسی مہربان کا عکس جس کا

…آئینہ ریزہ ریزہ  ہو گیا ہے

کوئی بِسری داستان ہُوں جس کو

…یاد کرنا دُشوار ہے

یا پھر سِسکتی شمعٰ جس کے

…جنون کو ایک جھونکے کا اِنتظار ہے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s