..آج شب چاند

image

آج چاند کےچہرے پہ

خوُبصورتی کمال کی ہے

اور میں خوش ہُوں تُم بھی

…یہِیں ہو اور میں بھی

آج چاندنی برسا رہی ہے

پیار شِدّت سے اور میں

خوش ہُوں تُم بھی تَک رہے

…ہو اور میں بھی

آج چاند کے دائرے میں

خُمار ہے بےخُودی کا اور

میں خوش ہُوں تُم بھی نشے

…میں ہو اور میں بھی

آج چاندنی ڈُوبی ہے مستی

کی شوخ ادا میں اور میں

خوش ہُوں تُم بھی مدہوش

…ہو اور میں بھی

آج چاند سُنہری پیاس کی

آگ میں جل رہا ہے اور

میں خوش ہُوں تُم بھی یاد

…کر رہے ہو اور میں بھی

 

3 thoughts on “..آج شب چاند

  1. آپکی یہ نظم پڑھ کر ، انکل غالب کے کچھ اشعار ذہن میں چلے آئے …

    ہے وَصل ، ِہجر ، عالم ِ تمکین و ضبط میں
    معشوق شوخ و عاشق دیوانہ چاہیے

    اُس لب سے مل ہی جائے گا بوسہ کبھی تو ہاں
    شُوق ِفضول و جرأت رندانہ چاہیے

    بعض کنارے پر “غوطہ زنی ” کرنے والے لسان پرست ، ان اشعار کی معنویت پر غور کیئے بغیر ، چل دیتے ہیں ….پر اگر غور سے دیکھا جائے …تو شاعر یعنی غالب ، یہاں پر بھی اپنے منفرد انداز میں ، محبت میں جرات اور حوصلہ کی اہمیت کے بارے میں لکھ رہے ہیں …” زیب داستاں ” کے لیئے ، الفاظ کی ہیر پھیر سے بھی ایک نیا مزہ پیدا کیا ہے

    Like

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s