محفلِ حُسن خیز

image

بَند پلکوں میں چُھپاتے ہیں دل کے چین کو

اِس بزم میں ستارۂِ چشم ہے کاجل و چراغ

کروٹ سرہانے بیٹھی ہے تُمہاری یاد لیۓ

اِس شام میں بِساطِ ریشم ہےخواب و رُخسار

بے تابی کےماتھےپہ پہنا ہے تاج عاشقی نے

اِس انجُمن میں حُسنِ طلب ہےعشق و حِصار

دل کے فرش پہ لگا ہے قُربتوں کا رنگین میلہ

اِس مِحفل میں حاصلِ سرُور ہے شمعٰ و خُمار

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s