حوصلہ

image

اُٹھ کے گِرتی ہُوں جب بھی

ایسی فتح کو مات دیتی ہُوں

رُکاوٹ بنتی ہے جب رِہ گُزر

ایسی سِیاحت کو مات دیتی ہُوں

خُود سے جنگ کرنے لگُوں جب

ایسی دُشمنی کو مات دیتی ہُوں

احساس جب روندتا ہے دل کو

ایسی دھڑکن کو مات دیتی ہُوں

رات جب روکے سِتاروں کا قافلہ

ایسی سیاہی کو مات دیتی ہُوں

صنم سے دُور کرے جو قُربت

ایسی فُرقت کو مات دیتی ہُوں

دامن میں جو اُبھریں کانٹے

ایسی سازش کو مات دیتی ہُوں

شمعٰ جس حِصار میں قید ہو

ایسی قندیل کو مات دیتی ہُوں

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s