بغاوت

image

سُلانا چاہتے ہیں شور و غُل جسے

وہ آندھیاں دَب نہیں سکتیِں

اوڑھاتے ہیں کالی رات تلےساۓ

وہ روشنیاں چُھپ نہیں سکتیِں

کھِلے ہنسی میں پِنہاں اَشک جہاں

وہ بارشیں تھَم نہیں سکتِیں

ہے ہلچل آگ کےسیلاب میں جتنی

وہ تباہِیاں رُک نہیں سکتیِں

مِٹا دےاصُول جو زِندگی کی زینت

وہ رُسوائیاں ٹھِہر نہیں سکتیِں

پڑیں لاکھ تماچے ضِد کی چاہ میں

وہ ڈِھٹائیاں ہَٹ نہیں سکتیِں

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s