تب سےاَب

image

تب چاند میرے آنگن میں روز اُترتا تھا

…اَب ہتھیلی پہ قدم جماۓ ہے

تب چاند نے کیۓ تھے چمن گُل و گُلزار

…اَب زرّہ زرّہ رُوح مِہکاۓ ہے

تب چاند کے نُور سے چمکا تھا صحن اپنا

…اَب جسم پہ ٹھنڈک برساۓ ہے

تب چاند کے وِرد میں تارے گھومتے تھے

…اَب نظروں سے رات جگمگاۓ ہے

تب چاند کے رنگ میں سِمٹی تھی شوخی

…اَب عشق میں کائنات جھِلملاۓ ہے

تب چاند کے خُمار میں شمعٰ جلی تھی

…اَب قطرہ قطرہ موم پِگھلاۓ ہے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s