بِلا شُبہٰہ

image

سچ ہےاُس کی تڑپ میں

سکُون مِیٹھی نیند سوتا ہے

سچ ہے اُس کے راستوں میں

کانٹوں کی سرحدیں ہیں

سچ ہے خواب کے پردےاُسے

ریشمی آنچل پہناتے ہیں

سچ ہےاُس کی مایوسی میں

اُمید چراغ جلاتی ہے

سچ ہے اَشک کی صداؤں میں

دُعائیں رنگ لے آتی ہیں

سچ ہے شعلوں کے رُخسار پہ

جنّت کا شاہی تاج ہے

سچ ہے جل کے ایندھن میں

پتھر ہی کُندن بَنتا ہے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s