تجَسُّس

image

جس تھکَن کے انحصار پہ

ٹُوٹتی ہے شِدّت اِس طرح تو

سوچو کہ جنون کا معیار

…کیسا ہوگا

جہاں سُست پڑنے لگے بدن

کہ کیا سُناۓ راز کروٹ تو

سوچو کہ خواب کا خُمار

…کیسا ہوگا

جو نین بھریں مے سے اور

آدھی کُھلتی تو کبھی بند

پلکوں میں چھُپیں نشِیلے پَل

تو سوچو کہ نیند کا قرار

…کیسا ہوگا

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s