ضَرب

IMG_1668

عشق اِنتہاۓ سرکشی کااُجڑا مزار ہے

نہ ڈَر ہے نہ خوف اِس کی تقدیر کا حِصّہ

ہجر و فُرقت میں بھی دیتا ہے سرُور بہت

وفاۓ بندگی ہے اِس ادھوری تحریرکا قِصّہ

پتنگِ جاں میں اَٹکی ہُوئی سانسیں ہیں

لہُو کی بِساط پہ ہے پھینکا ہُوا ایک پتّا

نظر سے رُوح چھُوۓ تو گُناہِ کبیرہ کیوں

جبر کی غُلامی پہ جھُکتا ہُوا حُکم کا اِکّا

ناشاد کرے اِحساسِ بے رُخی کی ادا اُسے

سمجھ سکو تو احترام ورنہ تو کھوٹا سِکّہ

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s