مَرکزِ جاناں

image

اِن بے خود گھٹاؤں کی

گڑگڑاہٹ میں جس کی

صدائیں مُجھے بلاتی ہیں

وہ شخص میرے دل کے

….موسموں کا سَبب ہے

یہ چھیڑتی مَست ہواؤں

کے رُخسار میں جس کا

لمس چُپکےسے میرے بدن

کو چومتا ہے وہ شخص

میرے حُسن کی

….راحتوں کا سَبب ہے

قطرہ قطرہ ٹپکتی بوُندوں

کی جھنکار میں بسی

تپِش جس کی حِدّت سے

مدہوش بناتی ہے وہ شخص

میری جلتی بُجھتی

….آہوں کا سَبب ہے

 

 

 

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s