..جذب ہُوئی

image

میں تیرا سایہ بنُوں تو

..دھُوپ میں ہی رہنا تُو صدا

میں تُجھ میں سما جاؤُں

..گی آفتاب بن کر

گُلوں سے جھڑتے لمحے

..جو چُومیں گے بدن تیرا

اُس خوشبو کی رنگت میں کھو

..جاؤُں گی خواب بن کر

جو بُوندیں نہلائیں تیرے وجود

..کی صَندلی گلیاں

میں اُن زرّوں میں ڈوب جاؤں

..گی شراب بن کر

گرم شِدّت میں جو ٹُوٹنے لگے

..تیری سرد آہیں

اِس شمعٰ کو اوڑھاؤں گی تُجھ

..پہ برفاب بن کر

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s